Jul 14, 2016

Pakistan Take Action Against Terrorists Us

Pakistan Take Action Against Terrorists Us

امریکی محکمہ خارجہ کے نائب ترجمان مارک ٹونر نے بریفنگ میں کہاہے کہ پاکستان کو ان جنگجوؤں کے خلاف بھی کارروائی کرنا ہو گی جو اس کے ہمسایہ ممالک کو نشانہ بنارہے ہیں ۔کشمیر پر امریکی پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے ۔ امریکا پاکستان اور بھارت دونوں پر زور دیتا رہا ہے کہ مسئلے کے حل کے لیے دونوں ممالک مذاکرات کا راستہ اختیار کریں ۔

مارک ٹونر نے کہا کہ پاکستان نے دہشت گردوں کی پناہ گاہوں کے خاتمے میں پیش رفت کی ہے اور پاکستان کے ان علاقوں میں حکومتی رٹ بحال کی ہے کہ جو کئی برسوں سے دہشت گردوں کی آماجگاہ بنے ہوئے تھے ۔

تاہم امریکا پہلے بھی اس بات پر زور دیتا رہا ہے کہ پاکستان کو ان جنگجوؤں کے خلاف بھی کارروائی کرنا ہو گی جو اس کے ہمسایہ ممالک کو نشانہ بنارہے ہیں ۔

نائب ترجمان کا کہنا تھا کہ امریکا جنرل راحیل شریف کے 6 جولائی کے بیان کا خیر مقدم کرتا ہے جس میں انہوں نے ملٹری کمانڈرز، انٹیلی جنس اداروں اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ہدایت دی تھی کہ وہ دہشت گردوں کے خلاف ٹھوس اقدامات کریں اور پاکستان کی زمین کو افغانستان میں کسی بھی حملے میں استعمال نہ ہونے دیں ۔

مارک ٹونر نے کہا کہ یہ امریکا کے طویل مدتی مفاد میں ہے کہ وہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی حمایت جاری رکھے ۔

کشمیر کے حوالے سے ایک سوال پر مارک ٹونر کا کہنا تھا کہ کشمیر پر امریکی پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے ۔ امریکا پاکستان اور بھارت دونوں پر زور دیتا رہا ہے کہ مسئلے کے حل کے لیے دونوں ممالک مذاکرات کا راستہ اختیار کریں ۔

No comments:

Post a Comment

Please Add Your Comments and Reviews Here.